Sad

اس دل کے ٹکڑے ہزار ہوتے

اس دل کے ٹکڑے ہزار ہوتے
گر ہم بھی بے اختیار ہوتے

ہم اپنے زخموں کا کیا شمار کرتے؟
کہ یہ حساب غلط بار بار ہوتے